پیارے دیس کی پیاری مٹی

Verses

پیارے دیس کی پیاری مٹی
سونے پرہے بھاری مٹی

کیسے کیسے بوٹے نکلے
لال ہوئی جب ساری مٹی

دکھ کے آنسو سکھ کی یادیں
کھاری پانی کھاری مٹی

تیرے وعدے میرے دعوے
ہوگئے باری باری مٹی

گلیوں میں اڑتی پھرتی ہے
تیرے ساتھ ہماری مٹی

Jab Tum Ho Mere Hamasafar Kubasurat

jab tum ho mere hamasafar kubasurat - 2
to hai zindagi ka safar kubasurat
jab tum ho

chala tir tir se sharamaana kya
ki jaan meri jaayegi ghabaraana kya
idhar bhi hai pyaare jigar kubasurat
jab tum ho

mujhe dekhakar yoon na gusse mein aa
milein na milein phir zara muskara
chehare pe gussa agar kubasurat
jab tum ho

chamakate hain gaalon pe dilaqash andhere
hai phoolon se naazuk kamar kubasurat
jab tum ho

Ulfat Ke Hain Kaam Niraale

hasrat-o-yaas ko le kar shab-e-gam aa_i hai
bhid ki bhid hai, tanahaayi hi tanahaayi hai

ulfat ke hain kaam niraale
ban ban ke bigad jaate hain
qismat mein na ho to saathi
mil mil ke bichhad jaate hain
ulfat ke hain

(ummidein bhi hain ik sapana
duniya mein nahin kuch apana) - 2
aansuu hain to bah jaate hain
aramaan hai to ? jaate hain
ulfat ke hain

(aavaaz uthi hai dil se
bedard zamaane sun le) - 2
kal tuu bhi ujad jaayega
ham aaj ujad jaate hain
ulfat ke hain

Mera Tesoo Yahin Ada

yuun ya ya...
mera tesoo yahin ada... yuun ya ya...
khaane ko maange dahi wada... yuun ya ya...
mera tesoo yahin ada, khaane ko maange dahi wada
sukh gaya mera tesoo ye...
sukh gaya mera tesoo, ek taang pe khada
yuun ya ya, yuun ya ya, yuun ya ya, yuun ya ya
mera tesoo yahin ada... yuun ya ya, yuun ya ya
khaane ko maange dahi wada... yuun ya ya, yuun ya ya
yuun ya ya, yuun ya ya...

کشمکش حیات کو جزو حیات پا کے ہم

Verses

کشمکش حیات کو جزو حیات پا کے ہم
ہر غم بے پناہ پر رہ گئے مسکرا کے ہم

جذب انہی میں ہو گئے ان کے حضور جا کے ہم
اپنی نظرسے کھو گئے ان سے نظر ملا کے ہم

رہ گئے تشنہ کام ہی تشنہ لبی مٹا کے ہم
دیکھ تو ہم کو ساقیا رند ہیں کس بلا کے ہم

غم ہی سکوں نواز تھا غم ہی خوشی کا راز تھا
آہ کہ خوش نہ رہ سکے غم سے نجات پا کے ہم

اس نے مزاج یار کو زحمت برہمی نہ دی
شکر گزار کیوں نہ ہوں نالہ نارسا کے ہم

تازہ بہ تازہ نو بہ نو اف وہ فریب کاریاں
بیٹھ سکے نہ مطمئن حسن کو آزما کے ہم

Maa Tujhe Salaam

Yahan vahan saara jahan dekh liya
Ab tak bhi tere jaisa koi nahin
Main assi nahin, sau din duniya ghooma hai
Naahi kaahe tere jaisa koi nahin
Main gaya jahan bhi, bas teri yaad thi
Jo mere saath thi mujhko tadpaati rulaati
Sab se pyaari teri soorat
Pyaar hai bas tera, pyaar hi
Maa tujhe salaam, maa tujhe salaam
Amma tujhe salaam
Vande maataram, vande maataram
Vande maataram, vande maataram
Vande maataram, vande maataram
Janam janam tera hoon deewana main
Jhoomoon naachoon gaaoon tere pyaar ka taraana

سلسلے جو وفا کے رکھتے ہیں

Verses

سلسلے جو وفا کے رکھتے ہیں
حوصلے انتہا کے رکھتے ہیں

ہم کبھی بد دعا نہیں دیتے
ہم سلیقے دعا کے رکھتے ہیں

ہم نہیں ہیں شکست کے قائل
ہم سفینے جلا کے رکھتے ہیں

ان کے دامن بھی جلتے دیکھے ہیں
وہ جو دامن بچا کے رکھتے ہیں

ہم بھی کتنے عجیب سے ہیں فراز
درد کو دل بنا کے رکھتے ہیں

Theme by Danetsoft and Danang Probo Sayekti inspired by Maksimer