چلی ہے شہر میں اب کے ہوا ترکِ تعلق کی

Verses

چلی ہے شہر میں اب کے ہوا ترکِ تعلق کی
کہیں ہم سے نہ ہو جائے خطا ترکِ تعلق کی

بناوٹ گفتگو میں ، گفتگو بھی اکھڑی اکھڑی سی
تعلق رسمی رسمی سا ، ادا ترکِ تعلق کی

ہمیں وہ صبر کے اس موڑ تک لانے کا خواہاں ہے
کہ تنگ آجائیں ہم ، مانگیں دعا ترکِ تعلق کی

بہانے ڈھونڈتا رہتا ہے وہ ترک مراسم کے
اسے ویسے بھی عادت ہے ذرا ترکِ تعلق کی

یہ بندھن ہم نے باندھا تھا سلامت ہم کو رکھنا تھا
بہت کوشش تو اس نے کی سدا ترکِ تعلق کی

وہ ملتا بھی محبت سے ہے لیکن عادتا ساجد
کئے جاتا ہے باتیں جا بجا ترکِ تعلق کی

ہر نفس ان کا خیال آتا رہا

Verses

ہر نفس ان کا خیال آتا رہا
زندگی پر پھول برساتا رہا

عشق میں ثابت قد م رہ کر بھی میں
ہر قدم پر ٹھوکریں کھاتا رہا

اللہ اللہ یہ ضبط غم کی دولتیں
عمر بھر کھوتا رہا پاتا رہا

ان کے اک عہد فریب انجام سے
زندگی بھر دل کو بہلاتا رہا

سر ِ صحرا حباب بیچے ہیں

Verses

سر ِ صحرا حباب بیچے ہیں
لب ِ دریا سراب بیچے ہیں

اور تو کیا تھا بیچنے کے لئے
اپنی آنکھوں کے خواب بیچے ہیں

خود سوال ان لبوں سے کرکے میاں
خود ہی ان کے جواب بیچے ہیں

زلف کوچوں میں شانہ کش نے ترے
کتنے ہی پیچ و تاب بیچے ہیں

شہر میں ہم خراب حالوں نے
حال اپنے خراب بیچے ہیں

جان من تیری بےنقابی نے
آج کتنے نقاب بیچے ہیں

میری فریاد نے سکوت کے ساتھ
اپنے لب کے عذاب بیچے ہیں

Mehendi

Mehndi rache gi tere haath, dholak baje gi saari raat -2
Jaake tum saajan ke saath, bhool na jaana yeh din raat
Tujhko des piya ka bhaye, tera piya tere gun gaye -2
Aye khushiyon ki baraat, leke rangon ki barsaat
Mehndi rache gi tere haath, dholak baje gi saari raat

Kangna baahon main jab khanke, khole bhed yeh tere mann ke -2
Chahe karo na koi baat, sub ne jaan liye jazbaat
Mehndi rache gi tere haath, dholak baje gi saari raat

(Tera ghoongat jo uthaye, roop tera seh na paye
Chaand ko woh bhool jaye, dekhe tera singhaar) -2

yek mahal ho sapanon kaa

yek mahal ho sapanon kaa
fulonbharaa aangan ho aaur saath ho apanon kaa

udate baadal farsha bane aaur dhoond kee ho diwaaren
chhat ke zilamil taaren teraa meraa naam pukaare
yek mahal ho sapanon kaa ...

sapanon ke is mahal mein bikhare musakaanon ke motee
mere pyaar kee khushaboo faile, tere rup kee jyotee
yek mahal ho sapanon kaa ...

mai tere nainon par kar doo, apanaa sabakuchh waaree
mai teree baahon mein chhoopakar, bhooloo duniyaan saaree
yek mahal ho sapanon kaa ...

Teri Duniya Mein Jeene Se

Hm hm hm, hm hm hm,
Aa aa ha a a aa a a a a a

Teri duniya mein jeene se to behtar hai ki mar jaaye
Wohi aansoo wohi aahe wohi gam haim jidhar jaaye
Teri duniya mein jeene se to behtar hai ki mar jaaye

Hu hu, hu hu

Koi to aisa ghar hota jahaan se pyaar mil jaata -2
Wohi begaane chehre hai jahaan pahonche jidhar jaaye
Teri duniya mein jeene se to behtar hai ki mar jaaye

Ho ho ho o o o o
Aa aa hm hm hm

Thoda Hain Thode Ki

kishore kumar
huuum huuu laalaalalaa
thoda hai thode ki jaroorat hai
zindagi phir bhi yahan khoobsurat hai
thoda hai thode ki (jaroorat hai)-2

kishor kumar
jis din paisa hoga vo din kaisa hoga
us din pahiye ghumenge aur kismat ke lab chumenge
bolo aeisa hoga
thoda hai thode ki jaroorat hai

Theme by Danetsoft and Danang Probo Sayekti inspired by Maksimer