Maula

maula... maula...
o o o o o o....
(mujko bata mera ghar hai kahaaan maula - 2
jogi bada main phirta rava kinna - 2) - 2

rooh ko tu hawa bas tu hi aab hai - 2
is nazar ko to sirf tera hi kwaab hai - 2
mujko bata mera ghar hai kahaaan maula - 2
jogi bada main phirta rava kinna - 2

Kuchh Yaadagaar-E-Shahar-E-Aitamagar Hi Le Chalein

kuchh yaadagaar-e-shahar-e-sitamagar hi le chalein
aaye hain is gali mein to patthar hi le chalein

ranj-e-safar ki koyi nishaani to paas ho
thodi si kaak-e-kuuchaa-e-dilabar hi le chalein

yuun kis tarah katega kadi dhuup ka safar
sar par kayaal-e-yaar ki chaadar hi le chalein

ye kah ke chhedati hai hamein dil-giraftagi
ghabara rahe hain aap to baahar hi le chalein

is shahar-e-be-charaag mein jaayegi tu kahaan
aa ai shab-e-firaaq tujhe ghar hi le chalein

Kaash Ke Tujhse

--MALE--
Hey hey hey hey hey, hey hey hey hey
Kaash ke tujhse main kabhi milta to kya hota - 2
Tujhe na kabhi chain se rehne deta - 2
Na main bhi kabhi chain se yaar sota

--FEMALE--
Kaash ke tujhse main kabhi milti to kya hota
Badha deti had se teri beqaraari - 2
Mere dil ka bhi to sanam chain khota

--MALE--
Kaash ke tujhse main kabhi milta to kya hota

دل ہی سوز دروں سے جل جاتا

Verses

دل ہی سوز دروں سے جل جاتا
کوئی ارمان تو نکل جاتا

ہے جو سب کچھ تو دل نہیں لگتا
کچھ نہ ہوتا تو دل بہل جاتا

ہم خوشی سے جو تیرا غم سہتے
غم کا عنوان ہی بدل جاتا

جل گیا طور کیا کمال ہوا
بات جب تھی نقاب جل جاتا

جنبش یک نظر کی حسرت تھی
کوئی گرتا ہوا سنبھل جاتا

دل میں آ کر وہ دیکھ تو لیتے
یہ بھی کیا طور تھا کہ جل جاتا

تم نگاہیں چرا چرا لیتے
رنگ محفل بدل بدل جاتا

O Taara Teraa-Mera Nahin Guzaara

o taara teraa-mera nahin guzaara - 2
tu thahari gharavaali main thahara banjaara
pyaara tera pyaar hai mujhako pyaara
tere liye gharabaar to kya main chhod duun ye jag saara

mela duniya do roz ka mela
o aataa-jaata yauvan jaise paani ka ik rela
mela duniya do roz ka mela
thaam le bainya mele mein are kaahe phire akela

dhokha mere saath huwa ve ye dhokha - 2
mera ghuunghat khol gaya beyimaan pavan ka jhonka
jhonka main hota kaash vo jhonka
mere haath se nikal gaya hai ek sunahara mauqa

دُنیا نے دل کو پیار کا تحفہ دیا نہیں

Verses

دُنیا نے دل کو پیار کا تحفہ دیا نہیں
ہم زندگی تھے ہم کو کسی نے جیا نہیں

سُورج سے ‘چاند سے بھی حسیں ایک روپ ہے
ایسے مکاں میں جہاں کوئی دیا نہیں

دُنیا کی اب شکایتیں کس مُنہ سے ہم کریں
ہم سے وفا کا وعدہ کسی نے کیا نہیں

روٹی بھی چاہیئے،ہمیں پانی بھی چاہیئے
ہم عام آدمی ہیں میاں اولیاء نہیں

اس کو بھی کچھ خبر نہیں آنچل کہاں گرا
ہم نے مگر زمین کا سودا کیا نہیں

موسم خزاں کا ہے، مری بانہیں اداس ہیں
پھولوں کو میں نے گود میں کب سے لیا نہیں

میرے لیے کسی کی محبت تھی کائنات
میں نے زمین و آسماں، کچھ بھی لیا نہیں

Theme by Danetsoft and Danang Probo Sayekti inspired by Maksimer