سفر کا ذوق ہی کچھ تو مسافروں میں نہ تھا

Verses

سفر کا ذوق ہی کچھ تو مسافروں میں نہ تھا
کچھ آرزو کا دفینہ بھی منزلوں میں نہ تھا

میں اپنے ہاتھ کو سنگسار کرنے نکلا ہوں
نظر میں جادو تھا ایسا جو انگلیوں میں نہ تھا

فصیل شب پہ کھڑا ہوں یہ سوچتا ہوں میں
کہ پہلے اتنا اندھیرا کبھی گھروں میں نہ تھا

دمک تھی جس کی پسینے کی باس میں پنہاں
وہ جسم و جان کا گوھر سمندروں میں نہ تھا

تمام عمر بھلا کیوں وہ میرے ساتھ رہا
جو دوست بن نہ سکا اور دشمنوں میں نہ تھا

کھلے ہیں ہاتھ میرے کیوں کہاں ہے مہر زباں
کہ اتنا گہرا سلیقہ تو رہزنوں میں نہ تھا

چلا گیا تیری گلیوں سے دور اب"خالد"
وہ شخص شہر کے اچھے سخنوروں میں نہ تھا

یہ زرد پتوں کی بارش میرا زوال نہیں

Verses

یہ زرد پتوں کی بارش میرا زوال نہیں
میرے بدن پہ کسی دوسرے کی شال نہیں

اُداس ہوگئی ایک فاختہ چہکتی ہوئی
کسی نے قتل کیا ہے یہ انتقال نہیں

تمام عمر غریبی میں باوقار رہے
ہمارے عہد میں ایسی کوئی مثال نہیں

وہ لا شریک ہے اُس کا کوئی شریک کہاں
وہ بے مثال ہے اُس کی کوئی مثال نہیں

میں آسمان سےٹوٹا ہوا ستارہ ہوں
کہاں ملی تھی یہ دُنیا مجھے خیال نہیں

وہ شخص جس کو دل وجاں سے بڑھ کے چاہا تھا
بچھڑ گیا تو بظاہر کوئی ملال نہیں

Peenewalo Suno

pee peenewalo suno peenewalo suno - 2
peenewalo suno
suno suno suno suno suno suno
(peenewalo suno na chupakar piyo
kabhi ishq aur sharab ko milakar piyo) - 2
tum kahoge yeh kaise mumkin hain yaar - 3
saamne tum sanam ko bithakar piyo
aur nazar se nazar phir milakar piyo
peenewalo suno na chupakar piyo
kabhi ishq aur sharab ko milakar piyo
tum kahoge yeh kaise mumkin hain yaar - 3
saamne tum sanam ko bithakar piyo
aur nazar se nazar phir milakar piyo
peenewalo suno na chupakar piyo

Zulm Karane Se Bura Hai Zulm Sahan Karana ... Bas Pyaar Rahega

zulm karane se bura hai zulm sahan karana
dar ke jine se achchha hai saamane ladake marana
na zulm na zaalim ka adhikaar rahega
duniya mein kuchh rahega to bas pyaar rahega

utha ke mil ke nind se tum sabako jaga do
is haath se us haath ko tum saath mila do
sachchaayi se tum jhuuth ki buniyaad hila do
aur vaqt ki aavaaz se aavaaz mila do
janata ke haath mein hi ikhtiyaar rahega
duniya mein kuchh rahega

Chadti Jawani Meri

Hoye, Chadhti jawaani meri chaal mastani
tune kadar na jaani rama
haaye rama, haaye rama, haaye rama

uljhe kaahe re main hoon
surat mein tujhse badh ke kahin
thehri tu hai jawaan to
main bhi sajeela, kuch kam nahi

Haaye, duniya huyi re mere pyar mein deewani
laakhon ki main diljaani rama
chadhti jawaani meri chaal mastaani...

woh kaun aisi hai jiska
hai roop aisa jaadoo bhara
laaye main bhi to dekhun
tu jiski dhun mein hai bawara

hoye, uske kadam choome teri jawaani
woh hai saher ki rani rama

دل لگی ہی دل لگی میں دل کسی کا ہوگیا

Verses

دل لگی ہی دل لگی میں دل کسی کا ہوگیا
دل کا لٹنا ایک دنیا کو تماشا ہوگیا

کم نہیں تھی یورشِ غم ہائے دنیا جان پر
کیا کہیں کیسے کہیں کیوں ہوگیا کیا ہوگیا

ہائے یوں بیٹھے بٹھائے کیا سے یہ کیا ہوگیا
شامِ غم آئی تو اس کا بھی سویرا ہوگیا

کیا تری جانب سے پھر کوئی اشارا ہوگیا
بس اسی صورت ہمارا بھی گذارا ہوگیا

لوگ یہ سمجھے مرے غم کا مداوا ہو گیا
دل کو کیا سوجھی محبت میں دوانا ہو گیا

کررہے ہو عاشقی سرور مگر یہ سوچ لو
کل نہ پچھتانا کہ میں دنیا میں رسوا ہوگیا

Jo Tumko Ho Pasand Wahi Baat Karenge

Jo Tumko Ho Pasand Wahi Baat Karenge
Tum Din Ko Agar Raat Kaho Raat Kahenge

Dete Na Aap Saath To Mar Jaate Hum Kabhi Ke
Poore Huye Hain Aapse Armaan Zindagi Ke
Hum Zindagi Ko Aap Ki Saugaat Kahenge
Tum Din Ko Agar...

Chaahenge... Nibhayenge... Sarhayenge Aap Hi Ko
Aankon Mein Dam Hai Jab Tak Dekhenge Aap Hi Ko
Apni Zubaan Se Aapke Jazbaat Kahenge
Tum Din Ko Agar...

Theme by Danetsoft and Danang Probo Sayekti inspired by Maksimer