Mere Chanda Mere Nanhe

mere chandaa mere nanhe
tujhe apne seene se kaise lagaau
suni godi mein kaise uthau
chup gaye laadle aanchalo mein
raat pariyon ka paigaam laai
kis tarah so gaya tu akele
kis tarah bin mere neend aai
mere chanda ...

tere sapane mein aa to gayi main
apni majbooriya kya bataau
boond bhi tan mein baaki nahi hai
bhookh teri main kaise mitaau
mere chanda ...

Dil Ke Badale Dil Hi Luungi

dil ke badale dil hi luungi pyaar ke badale pyaar
banjaaran huun prit hai meri dodhaari talavaar
banjaara huun aavaara mere pyaar ka kya aitabaar
aaj yahaan kal vahaan kahin is dil ko nahin qaraar

kisi ko apane dil mein rakh le (kisi ke dil mein kho ja) - 2
ho kisi ke dil mein kho jaa
kisi ek ko apana kar le (kisi ka ho ja) - 2
ho kisi ka ho jaa
dil ka saaz bada naazuk hai tuut na jaaye taar
banjaaran huun

اب وہی حرفِ جنوں سب کی زباں ٹھہری ہے

Verses

اب وہی حرفِ جنوں سب کی زباں ٹھہری ہے
جو بھی چل نکلی ہے وہ بات کہاں ٹھہری ہے

آج تک شیخ کے اکرام میں جو شے تھی حرام
اب وہی دشمنِ دیں ، راحتِ جاں ٹھہری ہے

ہے خبر گرم کہ پھرتا ہے گریزاں ناصح
گفتگو آج سرِ کوئی بتاں ٹھہری ہے

ہے وہی عارضِ لیلیٰ ، وہی شیریں کا دہن
نگہِ شوق گھڑی بھر کو جہاں ٹھہری ہے

وصل کی شب تھی تو کس درجہ سبک گزری تھی
ہجر کی شب ہے تو کیا سخت گراں ٹھہری ہے

بکھری اک بار تو ہاتھ آئی ہے کب موجِ شمیم
دل سے نکلی ہے تو کب لب پہ فغاں ٹھہری ہے

دستِ صیاد بھی عاجز ، ہے کفِ گلچیں بھی
بوئے گل ٹھہری نہ بلبل کی زباں ٹھہری ہے

آتے آتے یونہی دم بھر کو رکی ہوگی بہار
جاتے جاتے یونہی پل بھر کو خزاں ٹھہری ہے

ہم نے جو طرزِ فغاں کی ہے قفس میں ایجاد
فیض گلشن میں وہی طرزِ بیاں ٹھہری ہے

Swaminarayan Bhajman Pyaare

Jo Kaka ke sahaare jite hai, baat niraali hai unkee
Har roj dasheraa unkaa, har raat diwaali hai unkee

Swaminarayan bhajman pyaare, chauraashi teri kat jaayegi
Dur ho jaaenge, dukh tere saare, kismat teri khool jaayegi

Kakaji ki sab par ek si najar hai, Raajaa ho yaa rankh usko sabki fikar hai
Yaahaa rehmat ke bhare hai bhandaare, jholi bhi teri bhar jaayegi

Kakaji ko sache dil se jisne pookaaraa hai, Pragat ho ke Kakaji ne diyaa sahaaraa hai
Rom rom me tu Kaka ko basaale, Aatam teri sukh paayegi

Sab Rab De Hawaale

(tenu ishq huva ve yaar sab rab de hawaale
gudh sochana hai bekaar, sab rab de hawaale) - 2
gudh sochana hai bekaar, sab rab de hawaale
tenu ishq huva ve yaar sab rab de hawaale
gudh sochana hai bekaar, sab rab de hawaale
rab de hawaale....

(rog lag jaaye jo yeh chhode nahi chhutata
dhaaga do dilon ka rabba tode nahi tutata) - 2
hai mushkil bada pyaar?? sab rab de hawaale
tenu ishq huva ve yaar sab rab de hawaale
gudh sochana hai bekaar, sab rab de hawaale

Sajan Mere Satrangiya

MAIN TE TERI,MAIN TA TERI MAIN TA TERI, HO GAYI
SAJAN MERE SATRANGIYA,RANG RANGIYA
SAJAN MERE RANG RANG RANG RANG RANGIYA
MEHRBAN………..TU KAHAN…………..!

SONEYA RANJHNA
TU HI DIL TU HI JAAN
MEHERMA HANIYA
TERI BIN KOYEE NA

REPEAT
BELIYA SAJNA
BEETE DIN RAAT NA JALMA BALMA
TERE BIN KI KARNA
REPEAT

MAHIYA DHOLNA
MERE DIL TODNA
TU KHJH TE BOLNA
TU KUJH TE BOLNA
MERI JIND NU ROLLNA

تجھے بھلا کے جیوں ایسی بددعا بھی نہ دے

Verses

تجھے بھلا کے جیوں ایسی بددعا بھی نہ دے
خدا مجھے یہ تحمل یہ حوصلہ بھی نہ دے

مرے بیان صفائی کے درمیاں مت بول
سنے بغیر مجھے اپنا فیصلہ بھی نہ دے

یہ عمر میں نے ترے نام بے طلب لکھ دی
بھلے سے دامن دل میں کہیں جگہ بھی نہ دے

یہ دن بھی آئیں گے ایسا کبھی نہ سوچا تھا
وہ مجھ کو دیکھ بھی لے اور مسکرا بھی نہ دے

یہ رنجشیں تو محبت کے پھول ہیں ساجد
تعلقات کو ا س بات پر گنوا بھی نہ دے

Maar Gaya Bichuaa

maar gaya
bichhua bichhua
bedarda aadhi raat ko meri chhat pe chadh gaya
chori se haay ungli mein chhalla jad gaya
ai bedarda aadhi raat ko ...

raat ki baahon mein soyi thi main hoy hoy
anjaane sapnon mein khoi thi main hoy hoy
vo dank maara machalne lagi
neendon mein karvat badalne lagi
kam na hua haay dard aur badh gaya
haay bedarda aadhi raat ko ...

گزرے ہوئے طویل زمانے کے بعد بھی

Verses

گزرے ہوئے طویل زمانے کے بعد بھی
دل میں رہا وہ چھوڑ کے جانے کے بعد بھی

پہلو میں رہ کے دل نے دیا ہے بہت فریب
رکھا ہے اس کو یاد بھلانے کے بعد بھی

وہ حسن ہے کسی میں نہیں تاب دید کی
پنہاں ہے وہ نقاب اٹھانے کے بعد بھی

قربت کے بعد اور بھی قربت کی ہے تلاش
دل مطمئں نہیں تیرے آنے کے بعد بھی

گو تو یہاں نہیں ہے مگر تو یہیں پہ ہے
تیرا ہی ذکر ہے تیرے جانے کے بعد بھی

ساری زمیں کا نور بھی سورج نہ بن سکا
شب ہی رہی چراغ جلانے کے بعد بھی

نارِ حسد نے دل کو جلایا ہے یوں عدیم
یہ تو نشاں رہے گا مٹانے کے بعد بھی

لگتا ہے کچھ کہا ہی نہیں ہے اسے عدیم
دل کا تمام حال سنانے کے بعد بھی