آنکھوں میں ترا دیار بھی ہے

Verses

آنکھوں میں ترا دیار بھی ہے
دل درد سے ہمکنار بھی ہے

پت جھڑ کا سکوت ہے لبوں پر
ہمراہ مرے بہار بھی ہے

تو میری نظر میں اجنبی بھی
مِلنا ترا یادگار بھی ہے

مَیں تیرے لئے ہوں مانتا ہوں
مجھ کو غمِ روزگار بھی ہے

جیتا ہوں کہ جی رہا ہوں ماجد
جینا ہے کہ ناگوار بھی ہے

خاموشیوں میں ڈوب گیا ہے، گگن تمام

Verses

خاموشیوں میں ڈوب گیا ہے، گگن تمام
لو کر چلے ہیں، سارے پرندے، سخن تمام

وہ خوف ہے، کہ شدّتِ طوفاں کے بعد بھی
دبکے ہوئے ہیں باغ میں، سرو و سمن تمام

وُہ فرطِ قحطِ نم ہے کہ ہر شاخ ہے سلاخ
پنجرے کو مات کرنے لگا ہے، چمن تمام

کس تُندیٔ پیام سے بادِ صبا نے بھی
فرعون ہی کے، سیکھ لئے ہیں چلن تمام

ماجد یہ کس قبیل کے مہتاب ہم ہوئے
لکّھے ہیں، اپنے نام ہی جیسے گہن تمام

O Ji O Hero

daalo khaaq sabhi baaton pe dil se dil takaraane do
o ji o hero bolo ji zero hero mister zero

naam bade hain ye mushkil
tum mein koi aashiq ho to main de deti usako dil
mere naam ke charche hain shahar mein sabhi haseenon mein
jaane kaun hai lekin ek deevaana hai ham teenon mein
deevaana hai in teenon mein oh lo
ek nahi hai deevaana is mahafil mein deevaane do
o ji o hero ...

گئے موسم میں جو کِھلتے تھے گلابوں کی طرح

Verses

گئے موسم میں جو کِھلتے تھے گلابوں کی طرح
دل پہ اُتریں گے وہی خواب عذابوں کی طرح

راکھ کے ڈھیر پہ اب رات بسر کرنی ہے
جل چکے ہیں مرے خیمے‘مرے خوابوں کی طرح

ساعتِ دید کے عارض ہیں گلابی اب تک
اولیں لمحوں کے گُلنار حجابوں کی طرح

وہ سمندر ہے تو پھر رُوح کو شاداب کرے
تشنگی کیوں مجھے دیتا ہے سرابوں کی طرح

غیر ممکن ہے ترے گھر کے گلابوں کا شمار
میرے رِستے ہُوئے زخموں کے حسابوں کی طرح

یاد تو ہوں گی وہ باتیں تجھے اب بھی لیکن
شیلف میں رکھی ہُوئی کتابوں کی طرح

کون جانے نئے سال میں تو کس کو پڑھے
تیرا معیار بدلتا ہے نصابوں کی طرح

شوخ ہوجاتی ہے اب بھی تری آنکھوں کی چمک
گاہے گاہے ‘ ترے دلچسپ جوابوں کی طرح

ہجر کی شب ‘ مری تنہائی پہ دستک دے گی
تیری خوشبو ‘مرے کھوئے ہوئے خوابوں کی طرح

Teri In Adaaon Ne

Teri in adaaon ne
Teri in adaaon ne is dil ko ghaayal kar diya
Jeeye hum kis tarah jaanam - 2
Jeena hi mushkil kar diya
Teri in adaaon ne is dil ko ghaayal kar diya
Jeeye hum kis tarah jaanam
Jeena hi mushkil kar diya
Teri in adaaon ne
Zulfon mein tera chehra hai jaanam
Chaand badli mein jaise
Tu muskuraaye to maine jaana
Phool khilte hain kaise
O jaane jaan, sharma na aise
Mujhse nazar chura na aise
Teri in adaaon ne
Haai, teri in adaaon ne is dil ko ghaayal kar diya

O Makhna Ve

o makhna ve maine jaana ve - 2
kaisiyat hain kya main
why does it happen in love - 6
o makhna ve maine jaana ve
kaisiyat hain kya main
why does it happen in love - 4

yak bayak jab mili nazar
hosh uda jaane kidhar - 2
(yeh ab jaake maloom pada
hain bedardi yeh pyar bada) - 2
o makhna ve maine jaana ve
kaisiyat hain kya main
why does it happen in love - 4

Jaane Kab Anjaane

Jaane Kab Anjaane Tumse Mohabbat Karne Lage Hum
Jaane Kab Anjaane Tumse Mohabbat Karne Lage Hum
Paagal Dil Dhadka To Kis Chehre Pe Marne Lage Hum
Aisi Mulakaaton Se Mithi Mithi Baaton Se
Oh Chain Kahin To Khone Laga Hai
Jaane Kab Anjaane Tumse Mohabbat Karne Lage Hum

Is Dhadkan Ki Tanhaaiyon Ko Tum Jo Mile
In Palkon Mein Deewane Dil Ke Sapne Khile
Teri Is Khumaari Ka Aise Bekaraari Ka
Jaaneman Jaane Jaan Dard Naya Hai
Jaane Kab Anjaane Tumse Mohabbat Karne Lage Hum