وہ خط کے پرزے اُڑا رہا تھا

Verses

وہ خط کے پرزے اُڑا رہا تھا
ہواؤں کا رُخ دِکھا رہا تھا

بتاؤں کیسے وہ بہتا دریا
جب آ رہا تھا تو جا رہا تھا

کہیں میرا ہی خیا ل ہو گا
جو آنکھ سے گرتا جا رہا تھا

کچھ اور بھی ہو گیا نمایاں
مَیں اپنا لکھا مٹا رہا تھا

وہ جسم جیسے چراغ کی لَو
مگر دُھواں دِل پہ چھا رہا تھا

منڈیر سے جھک کے چاند کل بھی
پڑوسیوں کو جگا رہا تھا

اسی کا ایماں بِدل گیا ہے
کبھی جو میرا خُدا رہا تھا

وہ ایک دن ایک اجنبی کو
میری کہاننی سنا رہا تھا

وہ عمر کم کر رہا تھا میری
مَیں سال اپنا بڑھا رہا تھا

خدا کی شاید رضا ہو اس میں
تمہارا جو فیصلہ رہا تھا

Mera Dil Tujh Pe Marata Hai

mera dil tujh pe marata hai pyaar karata hai
chhod naadaani
nakhara na kar deevaani

tera dil mujh pe marata hai pyaar karata hai
ja re deevaane
na peechha kar paravaane

vaada karake na aana aake itana tadapaana
maine tujhako pahachaana tu hai paagal deevaana
chhup chhup ke aahen bharati hai
har baat pe na na karati hai
teri baaton mein jo aaoon gar
main mushkil mein pad jaaoongi
neend loota chain loota roop ki raani
nakhara na kar deevaani ...

Soch Liya Maine Aye Mere Dilbar

soch liya maine aye mere dilbar
hai yah vaada kiya maine aye jaan-e-jigar
ek tere siva mujhe aur kisi se pyaar karna nahi
soch liya maine aye mere dilbar ...

dil nahi hai tu dilruba hai tu
mere khayalo ki apsara hai tu
naazani hai tu mahajabin hai tu
dil jise chaahe vo hasi hai tu
mahaboob mere dil ki kasam
mujhe aah bharna nahi
soch liya maine aye mere dilbar ...

اس بت کدے میں تو جو حسیں ترلگا مجھے

Verses

اس بت کدے میں تو جو حسیں ترلگا مجھے
اپنے ہی اک خیال کا پیکر لگا مجھے

جب تک رہی جگر میں لہو کی ذرا سی بوند
مٹھی میں اپنی بند سمندر لگا مجھے

مرجھا گیا جو دل میں اجالے کا سُرخ پھول
تاروں بھرا یہ کھیت بھی بنجر لگا مجھے

اب یہ بتا کہ روح کے شعلے کا کیا ہے رنگ
مَرمَر کا یہ لباس تو سندر لگا مجھے

کیا جانیے کہ اتنی اداسی تھی رات کیوں
مہتاب اپنی قبر کا پتھّر لگا مجھے

آنکھوں کو بند کر کے بڑی روشنی ملی
مدھّم تھا جو بھی نقش، اُجاگر لگا مجھے

یہ کیا کہ دل کے دیپ کی لَو ہی تراش لی
سورج اگر ہے، کرنوں کی جھالر لگا مجھے

صدیوں میں طے ہوا تھا بیاباں کا راستہ
گلشن کو لَوٹتے ہوۓ پل بھر لگا مجھے

میں نےا سے شریکِ سفر کر لیا شکیب
اپنی طرح سے چاند جو بے گھر لگا مجھے

Tu Na Ja Mere Badshaah

(tu na jaa mere baadashaah ek vaade ke liye ek vaadaa tod ke) - 2
main vaapas aayungaa - 2
jaa rahaa hun main yahaan jaan apani chhod ke
tu na jaa mere baadashaah ek vaadaa tod ke
kudaa kaa tujhe vaastaa lautakar aanaa teraa dekhungi main raastaa - 2
ye vaadaa hai meraa - 2
main agar mar bhi gayaa to bhi vaapas aayungaa
ho na jaa mere baadashaah ek vaade ke liye ek vaadaa tod ke

Theme by Danetsoft and Danang Probo Sayekti inspired by Maksimer