خلاؤں میں معلق ہو گیا تھا/rafiq sandeelvi

noorulain's picture

خلاؤں میں معلق ہو گیا تھا
مجھے اس رات جانے کیا ہوا تھا

کچھ ایسی تیز سانسیں چل رہی تھیں
منڈیروں پر دیا بجھنے لگا تھا

مرے اونٹوں کی کونچیں کاٹ کر پھر
قبیلے نے کوئی بدلہ لیا تھا

کئی کتے اچانک بھنک اٹھے تھے
گلی میں کوئی سایہ رینگتا تھا

مری ملکہ کی ساتوں بیٹیوں پر
کسی ڈائن نے جادو کر دیا تھا

رفیق سندیلوی