خواب دیکھا کرو

Guest Author's picture

خواب گذ شت

خواب کیا چیز ہیں ؟
جانتا ہے کویٔ؟
خواب ہوتے ہیں کیا ؟

خواب وہ ہیں ، جسے ۔ ۔ ۔ ہم کو پانا ہے ؟
یا ہے کرامات ۔ ۔ ۔ ؟ ہم جس کے ہوں منتظر !

لوگ کہتے ہیں کہ ۔ ۔ ۔
خواب تو خواب ہیں ، یہ حقیقت نہیں !
تم نہ دیکھو انہیں ، کچھ نہیں پاؤ گے !!

دل یہ کہتا ہے کہ ۔ ۔ ۔
لوگ کہتے ہیں جو ۔ ۔ ۔ مان بھی لیں
اگر ۔ ۔ ۔
عہدِ فردا کو بھی دیکھ آۓ ہیں وہ !!!

خواب جھوٹے بھی ہوسکتے ہیں لوگ بھی
خواب دیکھا کرو ۔ ۔ ۔ ۔

شاعر ۔ یحییٰ خان یوسف زیئ ۔ پونہ ۔ انڈیا

Your rating: None Average: 4 (3 votes)