مری تحریک سے پیدا ہوا تھا/rafiq sandeelvi

noorulain's picture

مری تحریک سے پیدا ہوا تھا
کہ میں پُرکار تھا وہ دائرہ تھا

ہماری گائیاں ڈکرا رہی تھیں
تھنوں میں دودھ جامد ہو گیا تھا

کسی نے بت کے ٹکڑے کر دیے تھے
عبادت گاہ میں اک شور سا تھا

مری ماں مجھکو باہر ڈھونڈتی تھی
میں اپنے گھر کے ملبے میں دبا تھا

مجھے دو نیلی آنکھیں روکتی تھیں
مگر میں کالے پانی جا رہا تھا

رفیق سندیلوی