کہو تلوے چھلے دیکھے، رہ دشوار کو دیکھا

IN Khan's picture

کہو تلوے چھلے دیکھے، رہ دشوار کو دیکھا
کہا یوں ہی نہیں اس جادہٴ ھموار کو دیکھا

کہا دیکھا کرن کی نوک پر سورج کا آئینہ
کہو اب تک کسی بھی آئینہ بردار کو دیکھا

سنو جتنی بلندی، عکس اس کا پست اتنا ہی
کہو دریا کے پانی میں کبھی کہسار کو دیکھا

کہو برسات کی راتوں میں بجلی کی چمک دیکھی
کہا کالے لبادے میں کبھی اس نار کو دیکھا

کہو کیا بھاگتے کسی کی سمت دیوانے
کہا گرتے ھوئے بھی راہ میں دو چار کو دیکھا

سنو تم داستانیں پھر سنا لینا حسینوں کی
کہا تم یہ بتاؤ تم نے میرے یار کو دیکھا

بتا لفظوں کی تصویریں بنا دیں کس طرح تو نے
سنا کرتے تھے شعروں کو ترے اشعار کو دیکھا

سنو تم کیوں کھرے ہی مال کا پرچار کرتے ھو
کہا چلتے ھوئے ایسے ہی کاروبار کو دیکھا

Your rating: None Average: 5 (1 vote)