گیت تیرے حسن کے گاتا ہوں میں چاند کی کرنوں کو تڑپاتا ہوں میں

Bawa's picture

گیت تیرے حسن کے گاتا ہوں میں
چاند کی کرنوں کو تڑپاتا ہوں میں
منزل مقصود ہوتی ہے قریب
راستے سے جب بھٹک جاتا ہوں میں
دے رہا ہوں رات دن غم کو فریب
دل کو امیدوں سے بہلاتا ہوں میں
میرے استقبال کو ساقی اٹھے
میکدے میں جھومتا آتا ہوں میں
اسکے دل میں بھی ہے داغ سوز عشق
چاند کو ہم داستاں پاتا ہوں میں
چھیڑتی ہے صبح جب ساز حیات
وجد میں آکر غزل گاتا ہوں میں
خود تڑپتا ہوں تڑپ کر اے ضیاء
اہل محفل کو بھی تڑپاتا ہوں میں

Your rating: None Average: 3 (3 votes)