Shair

warning: Creating default object from empty value in /home/freeurdupoetry/public_html/modules/taxonomy/taxonomy.pages.inc on line 33.
noorulain's picture

دھری ہے بر سر ِ خواب ِ تمنا کوئی مشعل /rafiq sandeelvi

دھری ہے بر سر ِ خواب ِ تمنا کوئی مشعل
ابھی روکے ہوئے ہے میرا رستہ کوئی مشعل

یہ کس بیت الُجنوں میں رہ رہا ہوں مَیں کہ جس میں
نہیں ہے کوئی روزن کوئی زینہ کوئی مشعل

رفیق سندیلوی

noorulain's picture

نظام ِ خواب ہوا منتشر تو کیا ہو گا/rafiq sandeelvi

نظام ِ خواب ہوا منتشر تو کیا ہو گا
بس اتنا ہو گا کہ مُلک ِ بدن فنا ہو گا
وصال ِ نور کی جانب نہ لے کے چل مجھکو
ستارہ میرے بدن سے بہت بڑا ہو گا

رفیق سندیلوی

noorulain's picture

فلک بھی میرے لئے ہے زمیں بھی میرے لئے/rafiq sandeelvi

فلک بھی میرے لئے ہے زمیں بھی میرے لئے
نہیں ہے کوئی رکاوٹ کہیں بھی میرے لئے

رفیق سندیلوی

noorulain's picture

مزار روح پہ اک بھی دیا جلا نہ سکا/rafiq sandeelvi

مزارِ روح پہ اک بھی دیا جلا نہ سکا
یہ اعتکافِ نَفَس,یہ مراقبہ دل کا
رفیق سندیلوی

noorulain's picture

سبھی کچھ مٹ گیا ‘ پانی کی ہستی رہ گئی ہے /rafiq sandeelvi

سبھی کچھ مٹ گیا ‘ پانی کی ہستی رہ گئی ہے
فقط اک مسند ِ گریہ ہی باقی رہ گئی ہے

رفیق سندیلوی

noorulain's picture

دروازہءِ وحشت سے گزرے گا بدن میرا /rafiq sandeelvi

دروازہءِ وحشت سے گزرے گا بدن میرا
سالم نہیں رہ سکتا، بکھرے گا بدن میرا

noorulain's picture

زمیں گردش میں ہے، سارا زمانہ چل رہا ہے /rafiq sandeelvi

زمیں گردش میں ہے، سارا زمانہ چل رہا ہے
ہمیں سے روزوشب کا کارخانہ چل رہا ہے

noorulain's picture

اُڑن کھٹولے میں مہتاب کی طرف جاتا /rafiq sandeelvi

اُڑن کھٹولے میں مہتاب کی طرف جاتا
مرا بدن بھی درِ خواب کی طرف جاتا

Syndicate content