جسم کے تاریک لشکر سے بچائے گا مجھے/rafiq sandeelvi

Verses

جسم کے تاریک لشکر سے بچائے گا مجھے
اک ستارہ رات کے شر سے بچائے گا مجھے

میرے پہرے پر مقرر ہوگا باہر سے بدن
اور مرا یہ نفس اندر سے بچائے گا مجھے

مجھ کو صحرا سے بچائے گی اسی صحرا کی ریت
اور یہی پانی سمندر سے بچائے گا مجھے

موت جس ساعت مجھے آنی ہوئی آ جائے گی
کون زہر آلود خنجر سے بچائے گا مجھے

یہ پناہ ِ بام و در بزدل کرے گی اور بھی
اک کھلا میدان ہی ڈر سے بچائے گا مجھے

رفیق سندیلوی