Verses

وصل میں جھوٹی تسلی کے سوا کیا ہوگا
بہت اچھا، بہت اچھا، بہت اچھا ہوگا

دلِ افسردہ کا جب حال بیاں ان سے کیا
پھول کو مَل کے کہا ہاتھ میں، ایسا ہوگا

نگہء شوق کی خواہش کو سمجھ لو دل میں
ورنہ دو چار گھڑی بعد تقاضا ہوگا

تم کسی کے نہ ہوئے ہو، نہ کسی کے ہوگے
دل کسی کا نہ ہوا ہے، نہ کسی کا ہوگا

خوبیاں داغ کی جب اس نے سُنیں، سُن کے کہا
کیا غرض ہم کو، وہ اپنے لئے اچھا ہوگا

Author

Theme by Danetsoft and Danang Probo Sayekti inspired by Maksimer