Verses

انجمنیں اُجڑ گئیں، اُٹھ گئے اہلِ انجمن
چند چراغ رہ گئے، جن کی لویں ہیں سینہ زن

اب تیرا التفات ہے، حادثۂ جمال و فن
اندھے عقاب کی اُڑان، زخمی ہرن کا بانکپن

ہائے یہ مختصر حیات، ہائے یہ اِک طویل رات
اے میرے دوست اِک نظر اے میرے چاند، اِک کرن

حُسن اگر جھُکا رہا، بردرِ خسروانِ دہر
کٹتے رہیں گے کوہسار، مرتے رہیں گے کوہکن

اُترے ہیں بر گہائے زرد، لالہ و گُل کے روپ میں
ایسے نحیف جسم پر، اتنا مہین پیرہن

Theme by Danetsoft and Danang Probo Sayekti inspired by Maksimer