Verses

جہاں بھی رہنا ہمیں یہی اک خیال رکھنا
زمیں فردا پہ سنگِ بنیاد حل رکھنا

حضور اہلِ کمال فن سجدہ ریز رہنا
گناہ میں طرہؑ کلاہ کمال رکھنا

وہ جس نے بخشی ہے بے نواؤں کو نعمتِ حرف
وہی سکھادے گا حرف کو بے مثال رکھنا

اندھیری راتوں میں گریہء بے سبب کی توفیق
میسر آئے تو غم کی دولت سنبھال رکھنا

Author

Theme by Danetsoft and Danang Probo Sayekti inspired by Maksimer