Nazron Ne Teri

Nazron Ne Teri Jab Dil Ko Chua
Nazron Ne Teri Jab Dil Ko Chua
Seene Se Gaya Mera Dil Yeh Deewana Dil Kahan Hai
Nazron Ne Teri Jab Dil Ko Chua
Seene Se Gaya Mera Dil Yeh Deewana Dil Kahan Hai
Tera Dil Hum Chura Le Gaye Dil Ban Ke Hum Aagaye
Tera Dil Hum Chura Le Gaye Deewane Kya Jaane Tu Deewangi Meri
Nazron Ne Teri Jab Dil Ko Chua
Seene Se Gaya Mera Dil Yeh Deewana Dil Kahan Hai

قبولیت کا گِلہ نہیں ہے

Verses

قبولیت کا گِلہ نہیں ہے
کہ لب پہ کوئی دُعا نہیں ہے

عذابِ جاں کا صِلہ نہ مانگو
ابھی تمھیں تجربہ نہیں ہے

اُداس چہرے‘ سوال آنکھیں
یہ میرا شہر وفا نہیں ہے

یہ بستیاں جس نے راکھ کر دیں
چراغ تھا وہ‘ ہَوا نہیں ہے

کوئی تو لمحہ سکون کا بھی
یہ زندگی ہے‘ سزا نہیں ہے

تم پوچھو اور میں نہ بتاؤں ، ایسے تو حالات نہیں

Verses

تم پوچھو اور میں نہ بتاؤں ، ایسے تو حالات نہیں
ایک ذرا سا دل ٹوٹا ھے ، اور تو کوئی بات نہیں

کس کو خبر تھی سانولے بادل بن برسے اڑ جائیں گے
ساون آیا لیکن اپنی قسمت میں برسات نہیں

ٹوٹ گیا جب دل تو پھر یہ سانس کا نغمہ کیا معنی
گونج رھی ھے کیوں شہنائی جب کوئی بارات نہیں

غم کے اندھیارے میں تجھ کو اپنا ساتھی کیوں سمجھوں
تو پرتو ھے میرا تو سایا بھی میرے ساتھ نہیں

ختم ھوا میرا افسانہ ، اب یہ آنسو پونچھ بھی لو
جس میں کوئی تارا چمکے آج کی رات وہ رات نہیں

میرے غمگیں ھونے پر احباب ھیں یوں حیراں قتیل
جیسے میں پتھر ھوں ، میرے سینے میں جذبات نہیں

لب پہ آئے، بکھر گئے نغمے

Verses

لب پہ آئے، بکھر گئے نغمے
دل کو بے چین کر گئے نغمے

جنبشِ لب سے وا ہوئے غنچے
صورتِ گل نکھر گئے نغمے

دُور تک تیرا ساتھ قائم تھا
دُور تک ہم سفر گئے نغمے

دھڑکنوں کی زباں سے نکلے تھے
پتّھروں تک بکھر گئے نغمے

اُڑ گئے جیسے اوس کے ہمراہ
تھے جو ماجد سحر سحر نغمے

Doob Ke Dariya Mein Kar Lungi Khudkhushi

doob ke dariya mein kar loongi khudakushi
jo tere sang ladaki kabhi dekhi kaheen

doob ke dariya mein kar loonga khudakushi
jo tere sang ladaka kabhi dekha kaheen

dil na todoge kabhi mujhase vaada ye karo
pyaar na kam ho kabhi tum iraada ye karo
mere khvaabon mein sanam rahati ho shaam-o-sahar
is kadar chaaha tumhen nahi duniya ki khabar
jaane kyon mere piya mujhe lagata ye dar
mera aitabaar karo ai meri jaan-e-jigar
gaadi ke neeche aake kar loongi khudakushi
jo tere sang ...

Rona Hain To Ro Chupke Chupke

rona hai to ro chupake-chupake
aansu na bahe aawaaz na ho -2

vo dekh na le vo jaan na le
surat se teri pehachaan na le
ab ponch de aankhon se aansu -2
maalum kisi ko raaz na ho

majboor hamein rehna hoga
mar-mar ke yahaan jeena hoga
dukh-dard ka saathi dil hai mera -2
is dil pe mujhe kyon naaz na ho
rona hai to ro ...

( jo baat hai dil ki dil mein rahe
vo dil hi kya jo gam na sahe ) -2
shikava na zubaan par aane de -2
fariyaad mein bhi aavaaz na ho
rona hai to ro ...

Theme by Danetsoft and Danang Probo Sayekti inspired by Maksimer